منافعے کی ہوس

 مصنف: اسد زمان

مترجم: کنول نذیر

ایک بم ہزارغم


خلیل احمد

روسی ادیب چیخوف نے افسانے کی تکنیک پر بات کرتے ہوئے لکھا تھا کہ اگرا س میں بندوق کا ذکر آیا ہے تواس بندوق کو افسانہ ختم ہونے سے پہلے چل جانا چاہیے۔ پاکستان نے جب سے ایٹم بم بنائے ہیں تب سے چیخوف کے پاکستانی پیروکار بضد ہیں کہ انھیں چلانا نہیں تو بنایا کیوں۔

واپڈا کے ایک چیئر مین، ریٹائرڈ جنرل، کہتے تھے کہ یہ بم کیوں بنا رکھے ہیں، ماریں انھیں انڈیا پر۔ وہ تعداد بھی بتاتے تھے کہ کتنے بم بھارت کو تباہ کرنے کے لیے کافی ہوں گے۔ ایک نامور صحافی اور نظریہءپاکستان کے علمبردار بھی ان بموں سے خاصے خفا ہیں۔ وہ بھی چیخوف کے بتائے سبق کے مطابق ایک ایسا افسانہ لکھنا چاہتے ہیں جس میں پاکستان کے پاس موجود تمام ایٹم بم بھارت پر استعمال کر دیئے جائیں۔

پاکستان کی غیر آئینی تاریخ: ایک مختصر خاکہ

ڈاکٹرخلیل احمد

            " میں آپ کو یقین دلاتا ہوں مجھے اداکاری نہیں آتی۔ اگر مجھے سیاسی اقتدارکی خواہش ہو تو روکنے والا کون ہے۔