ہم آزاد ڈاٹ آرگ آ ئین اور قانون کی عملداری کے تحت ایک محدود اور ذمے دارحکومت کے فروغ پر یقین رکھتی ہے؛ اس کی اقدار میں شخصی آزادی، مارکیٹ اکانومی، اور نجی ملکیت کے تحفظ کونمایاں مقام حاصل ہے۔ ہم آزاد ڈاٹ آرگ، آلڑ نیٹ سالوشنزانسٹیٹیوٹ کااردو پراجیکٹ ہے جسے ہم انٹر نیٹ پر اردو کا سب سا بڑا پورٹل بنانے کا ارادہ رکھتے ہیں جہاں کلا سیکل لبرلزم کے فلسفے، اقداراور تصورات سے متعلق تمام مواد اردو میں دستیاب ہوگا؛ اس کے ساتھ ساتھ یہاں ہماری انگریزی ویب سائٹ پرموجود اور نئے پوسٹ کیےجانے والے مواد کوبھی با قاعدگی کے ساتھ اردو میں منتقل کیا جائے گا۔

 

 

 

 

اے ۔ ایس ۔ انسٹیٹیوٹ:

     
 

اے ۔ ایس ۔ انسٹیٹیوٹ، پاکستان کا پہلافری مارکیٹ تِھنک ٹینک، اپریل2003 میں لاہور میں قائم ہوا۔یہ ایک خودمختار، رجسٹرڈ، نان پرافٹ، غیرسیاسی، غیرسرکاری، تعلیمی اور تحقیقی ادارہ ہے، جو"افراد کی فلاح افراد کے ہاتھوں"کے اصول پریقینرکھتا ہے، اورکسی بھی طرح کی جانبداریت یا سیاسی وابستگی سے پاک،باہمی بہبود اور معاونت پرمبنی ہے۔

اس ادارے کے رہنما فلسفے کی بنیاد ،محدودحکومت، قانون کی حکمرانی، حقوقِ مال و متاع کے تحفظ، بازار معیشت،شخصی آزادی اور نجی سعی کی اقدار پر ہے۔

www.asinstitute.org

 
     

اپنے مقاصدکے حصول کے لیے انسٹیٹیو ٹ درجِ ذیل سرگرمیو ں پر عمل پیر ا ہے:

 

  • 1 .صحت،تعلیم، معاشیات، قانون، اور دوسرے شعبوں میں پاکستان کو درپیش چیلنجز سے نبرد آزما ہو نے کے لیے اپنے رہنما فلسفے اوراقدارکی رُوسے حل تلاش کرنا؛ اور ان اقدامات سے رجوع لانا:

     

    ا ۔ ان چیلنجزکے حل کے حامل اصل متون کی اشاعت اور فروغ،یاپھران کے حل سے متعلق تحقیقات کرنا اورانگریزی،اُردو یادیگرعلاقائی زبانوں میں ان کی اشاعت اورفروغ۔

     

    ب ۔ اپنے اصولوں کی ترویج کے لیےطلبا،اساتذہ،وکلااورصحافیوں،اوردلچسپی رکھنے والے افراد کے لیے سیمینارز،ورکشاپس اور کانفرنسز کاانعقاد۔

     

    ج ۔ اپنے رہنمافلسفے اورمقاصدسے ہم آہنگ کسی بھی قومی یابین الاقوامی ادارے یا فرد کے ساتھ برابری،باہمی احترام اوراداراتی خودمختاری کی بنیادپراشتراک /تعاون ۔

     

    د ۔ موزوں متنون کے دوسری زبانوں سے اُردو یادیگرزبانوں میں تراجم،اشاعت اورترویج ۔

  • 2 .رائے عامہ کی تبدیلی کے ذریعے محدودحکومت ،قانون کی حکمرانی، حقوقِ مال و متاع کے تحفظ، منڈی کی معیشت،شخصی آزادی اور نجی سعی کے فوائدکی زیادہ سے زیادہ بہتر تفہیم کو ممکن بنا کر اپنے مجوزہ اقدامات پر عمل درآمد کی قبولیت کو فروغ دینا۔فکرونظر میں ایسی تبدیلی لانے کے لیے ان سرگرمیوں کو کام میں لانا جو کہ محولہ بالانمبر1میں بیان کی گئی ہیں۔